ایک غلام تھا اس کی ماں، بچے بھی اس کے ساتھ تھے، ایک دن وہ کام پر نہ گیا تو اس کے مالک نے سوچا کہ مجھے اس کی تنخواہ میں کچھ اضافہ کر دینا چاہیئے تاکہ وہ اور دلجمعی سے کام کرے اور آئندہ غائب نہ ہو۔ 
اگلے دن مالک نے اس کی مقررہ تنخواہ سے کچھ زیادہ پیسے اسے دیے جو اس نے خاموشی سے رکھ لیے اور کچھ نہ کہا
 sabaq amoz waqiat in urdu, sabaq amoz quotes, sabaq amoz shayari, sabaq amoz meaning in english, sabaq amoz qissay, sabaq amoz urdu cartoon, sabaq amoz in english, sabaq amoz videos, qisay kahaniyan,qurani qissay in urdu mp3, qurani qissay in urdu, bookislamic qissay in hindi,لیکن کچھ دنوں بعد وہ دوبارہ غیر حاظر ہوا تو اس کے مالک نے غصے میں آ کر اس کی تنخواہ میں کیا گیا اضافہ ختم کردیا  اور اگلے دن پھر اس کو پہلے والی تنخواہ ہی دی، غلام نے اب بھی خاموشی اختیار کی اور کچھ نہ کہا
تو مالک نے کہا؛ "جب میں نے اضافہ کیا تو تم خاموش رہے اور اب جب کمی کی تو پھر بھی خاموش ہو کیوں؟
 تب غلام نے جواب دیا
جب میں پہلے دن غیر حاظر تھا تو اس کی وجہ بچے کی پیدائش تھی اور آپ کی طرف سے تنخواہ میں اضافے کو میں نے وہ رزق خیال کیا جو وہ اپنے ساتھ لے کے کر آیا
اور جب میں دوسری مرتبہ غیر حاظر تھا تو اس کی وجہ میری ماں کی وفات تھی اور آپ کی طرف سے تنخواہ میں کمی کو میں نے وہ رزق خیال کیا جو وہ اپنے ساتھ واپس لے گئی
پھر میں اس رزق کے خاطر کیوں پریشان ہوں جس کا ذمہ خود اللہ نے اٹھایا ہوا ہے۔

Post a Comment Blogger

 
Top