ایک بادشاہ کا غلام گھو ڑے پر سوار غرور کے عالم میں چلا آرہا تھا ۔ سامنے ایک بزرگ آگئے ۔
 انہو ں نے اس مغرور غلام سے کہا : یہ اکڑ خانی تو اچھی نہیں ۔
غلام نے اور زیادہ اکڑ سے کہا ۔
  میں فلاں بادشاہ کا غلام ہوں   اور وہ بادشاہ مجھ پر بہت بھروسہ کرتا ہے جب وہ سوتا ہے تو میں اس کی حفاظت کرتا ہوں۔ جب 
اسے بھو ک لگتی ہے تو میں اسے کھانا دیتا ہو ں ۔ کوئی حکم دیتا ہے تو فوراً بجا لاتا ہوں ۔
sabaq amoz urdu cartoon, sabaq amoz in english, sabaq amoz videos, aqisay kahaniyan,qurani qissay in urdu mp3, qurani qissay in urdu, bookislamic qissay in hindi, sabaq amoz waqiat in urdu, sabaq amoz quotes, sabaq amoz shayari, sabaq amoz meaning in english, sabaq amoz qissay, اس پر بزرگ نے پوچھا
اور جب تم سے کوئی غلطی ہو جاتی ہے تو ؟
غلا م نے جوا ب دیا۔
 اس صورت میں مجھے کو ڑے لگتے ہیں۔
اس پر بزر گ بولے ۔
 تب تم سے زیادہ مجھے اکڑنا چاہیے ۔
غلا م نے حیران ہو کر پو چھا
وہ کیسے ؟ بزر گ بو لے۔ میں ایسے با دشا ہ کا غلام ہو ں کہ جب میں بھو کا ہوتا ہو ں تو وہ مجھے کھلاتا ہے ۔ جب میں بیمار ہوتا ہوں وہ مجھے شفا دیتا ہے ۔ جب میں سوتا ہوں تو وہ ہر طرح میری حفاظت کرتا ہے ۔ جب مجھ سے غلطی ہوجائے اور میں اس سے معافی مانگ لوں تو بغیر کوئی سزا دئیے اپنی رحمت و مہربانی سے مجھے بخش دیتا ہے ۔ 
یہ سن کر ا س مغرور غلام نے کہا:  تب تو مجھے بھی اس کا غلام بنا دیں ۔ 
بزرگ فوراً بولے
بس تو پھر اللہ کا ہو جا ۔ ایسا مالک تمہیں کہیں نہیں ملے گا ۔

Post a Comment Blogger

 
Top