guzashta chand saloon se telephone aur mobile ki duniya mein zabardast inqilab aaya hai. mobile phone aur knkshn be intahaa sastay honay ki wajah se poori duniya mein mobile phone ke sarfeen ki tadaad mein herat angaiz tor par izafah howa hai. malik Pakistan mein mobile sarfeen ki tadaad karorron mein hai. telephone be shuba aik jadeed technology aur waqt ki ahem zaroorat hai. lekin is ke istemaal ke hawalay se baaz ikhlaqiaat ka malhooz rakha jana bohat zurori hai. lekin mobile phone companiyon ke cal aur massages ke nnat naye packages ke bavsf bohat se log is ka ghalat istemaal karte hain. molana Akhtar Seddiq sahib ne paish e nazar kitabcha isi wajah se taleef kya hai ke logon ko mobile aur telephone ke ghalat istemaal se bacha kar is Nemat
گزشتہ چند سالوں سے ٹیلیفون اور موبائل کی دنیا میں زبردست انقلاب آیا ہے۔ موبائل فون اور کنکشن بے انتہا سستے ہونے کی وجہ سے پوری دنیا میں موبائل فون کے صارفین کی تعداد میں حیرت انگیز طور پر اضافہ ہوا ہے۔ ملک پاکستان میں موبائل صارفین کی تعداد کروڑوں میں ہے۔ ٹیلیفون بے شبہ ایک جدید ٹیکنالوجی اور وقت کی اہم ضرورت ہے۔ لیکن اس کے استعمال کے حوالے سے بعض اخلاقیات کا ملحوظ رکھا جانا بہت ضروری ہے۔ لیکن موبائل فون کمپنیوں کے کال اور میسجز کے نت نئے پیکجز کے باوصف بہت سے لوگ اس کا غلط استعمال کرتے ہیں۔ مولانا اختر صدیق صاحب نے پیش نظر کتابچہ اسی وجہ سے تالیف کیا ہے کہ لوگوں کو موبائل اور ٹیلیفون کے غلط استعمال سے بچا کر اس نعمت سے استفادے کی طرف راغب کیا جائے۔ انھوں نے کتاب میں ٹیلیفون اور موبائل پر گفتگو کے آداب ذکر کیے ہیں اور اس بات کی بھی وضاحت کی ہے کہ موبائل کا غلط استعمال کس طرح کیا جاتا ہے۔ اس کے علاوہ موبائل پر معصوم خواتین کو اپنے جال میں پھنسانے والوں کو طریقہ واردات اور ان کے علاج کو شامل کتاب کیا گیا ہے۔ موبائل فون کے استعمال کے چند خاص آداب ذکر کرنے کے ساتھ ساتھ بعض حقیقی واقعات بھی ذکر کیے گئے ہیں جو ان لڑکیوں کے لیے مشعل راہ ہیں جو ٹیلی فونک رابطہ کے ذریعے اپنے خوابوں کا شہزادہ تلاش کرنے کی کوشش کرتی ہیں مگر اپنا سب کچھ برباد کرا بیٹھتی ہیں۔

Post a Comment Blogger

 
Top