میں نے آہٹ سنی تو آنکھیں کھول کے دیکھا۔سر پر ملک الموت کھڑا تھا۔میں اُس وقت کمرے میں لیٹا تھا۔
heart touching urdu poetry, heart touching urdu poetry 2 lines, heart touching urdu poetry facebook, heart touching urdu poetry two line، heart touching urdu poetry wallpapers، heart touching urdu shayari، heart touching urdu ghazal، heart touching poetry in urdu mp3
امّی سو رہی تھیں۔
کیوں آئے ہو؟میں نے پوچھا۔
تمھاری امّی کو لے جانا ہے۔
اُس نے سپاٹ لہجے میں کہا۔میرا دل ڈوب گیا، آنکھیں نم ہوگئیں۔ایسا مت کرو۔میں گڑگڑایا
مجھے امّی سے بہت پیار ہے۔
میں اکیلا واپس نہیں جاسکتا۔ وہ بولا
اچھاایک سودا کرتے ہیں۔
میں نے کہاتم امّی کے بجائے مجھے ساتھ لے چلو۔
میں تمھیں ہی لینے آیا تھا۔اُس نے بتایا لیکن
تمھاری ماں نے پہلے سودا کر لیا۔

Post a Comment Blogger

 
Top